23

کورونا وائرس کی نئی قسم سامنےآگی

دنیا بھر میں کورونا کی دوسری لہر میں شدت کیساتھ ساتھ بعض ملکوں میں ویکسی نیشن کا عمل بھی جاری ہےتاہم برطانیہ میں کورونا وائرس کی نئی قسم سامنے آنے کے بعدحکام تشویش میں مبتلا ہو گئے ہیں ، اب تک جو ویکسین تیار کی گئی ہے وہ اس وائرس کیلئے کارگر نہیں ہےاور وی یو آئی نام کا وائرس پہلے سے موجود کورونا کے مقابلےمیں 70گنا زیادہ تیزی سے پھیل رہا ہے۔اس ہنگامی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے وزیر اعظم بورس جانسن کی زیر صدارت برطانوی کابینہ کا ہنگامی اجلاس بھی ہوا۔
برطانوی وزیر صحت نے میڈیا کو بتایا کہ انہوں نے صورتحال کی سنگینی کے حوالے سے عالمی ادارہ صحت کو آگاہ کردیا ہے۔
تازہ ترین اعدادو شمار کے مطابق دنیا بھر میں متاثر ہونیوالے سات کروڑ71 لاکھ سے زیادہ متاثرہ افرادمیں سے17لاکھ کے قریب لقمہ اجل بن گئے تاہم پانچ کروڑ40لاکھ سے زیادہ افراد وائرس کو شکست دینے میں کامیاب ہوگئے۔امریکہ بدستور پہلے نمبر پر ہےجہاں کورونا سے متاثر ہونیوالےایک کروڑ82لاکھ سے زیادہ افراد میں سےتین لاکھ24ہزار سے زیادہ ہلاک جان کی بازی ہار گئے ہیں۔غربت اور جہالت سے تباہ حال بھارت جہاں اب تک ایک کروڑ56 ہزار سے زیادہ افرادکورونا کا نشانہ بن چکے ہیں اور وہاں ہلاکتوں کی تعداد ڈیڑھ لاکھ کے قریب ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں