15

 2020میں بھارتی جارحیت میں بہت تیز ی سے اضافہ ہوا ہے،ایمنسٹی انٹرنیشنل

 2020میں بھارتی جارحیت میں بہت تیز ی سے اضافہ ہوا ہے،ایمنسٹی انٹرنیشنل
21نوجوان لڑکیوں کی زبردستی ہندؤں سے شادی کرائی گئی،کشمیرمیں ظلم کی انتہاکی گئی،رپورٹ
مظفرآباد(باغ ٹائمزنیوز) پاکستان پیپلزپارٹی آزادکشمیر ہیومن رائٹس کے مرکزی صدر وسابق ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل صاحبزادہ محمود احمد نے مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے سال 2020ء کی ایمنسٹی انٹرنیشنل کی رپورٹ کو اقوام متحدہ،عالمی برادری کے منہ پر طمانچہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جبر،ظلم وستم ماروائے قانون عدالت قتل، حراستیں، بنیادی انسانی حقوق کی صریحاً خلاف ورزی ہیں جس پر عالمی برداری کی خاموشی اور جانبداری لمحہ فکریہ ہے اور ایک المیہ ہے انہوں نے کہا کہ ایمنسٹی انٹرنیشنل کی جاری رپورٹ کے مطابق سال 2020میں بھارتی جارحیت میں بہت تیز ی سے اضافہ ہوا ہے،21سو نوجوانوں لڑکیوں کی جبراً ہندووں سے شادیوں کی مذمت کرتے ہوئے سلامتی کونسل، او آئی سی سمیت عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مظلوم کشمیریوں پر بھارتی جبر اور مظالم کیخلاف بھارت پر ہر قسم کی پابندیاں عائد کی جائیں اور مقبوضہ کشمیر کی صورتحال معلوم کرنے کیلئے ایمنسٹی انٹرنیشنل سمیت دیگر بین الاقوامی گروپس کو اجازت دلائی جائے تاکہ درست صورتحال سے دنیا کو آگاہ کیا جاسکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں